ممبئی کی مساجدمیں آخری عشرہ میں نمازیوں کا جم غفیر

Maharashtra

ممبئی کی مساجدمیں آخری عشرہ میں نمازیوں کا جم غفیر

نمازتراویح پڑھانے والے حفاظ میں والد، سگے بھائی، عوامی نمائندے بھی شامل ہیں

ممبئی،24,اپریل(یواین آئی) عروس البلاد ممبئی میں ماہ رمضان کے دوسرے عشرے کے  دوران ملک بھر سے نمازتراویح کے لیے الگ الگ زبان اور   شناخت رکھتے ہیں،جیسا کے پہلے بتایا گیاہے کہ متعدد مساجد میں باپ بیٹے،بھائی بھائی اور ،عوامی نمائندے بھی امامت کے فرائض انجام دے رہے ہیں ،جنوب وسطی ممبئی میں واقع حاجی اسماعیل حاجی الاناسینی ٹوریم مسجد میں امامت کے فرائض حافظ مسیح الدین انجام دے رہے ،جبکہ ان کے والد محترم  مصلح الدین تین دہائیوں سے موذن ہیں،جبکہ چھوٹے بھائی منور مصلح الدین ماہ مبارک میں امام صاحب کے ساتھ نماز تراویح پڑھاتے ہیں۔دونوں بھائی گجرات کے بلیموریا ضلع کے ایک مدرسہ سے فارغ ہو یہ ں،جبکہ دوچھوٹے بھائی تعلیم حاصل کررہے ہیں۔

امام وخطیب مولانا مسیح الدین 2009 سے نماز تراویح پڑھاتے ہیں جبکہ 2013 سے امامت کے فرائض انجام دے رہے ہیں اور اعلیٰ دینی تعلیم حاصل کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔سینی ٹوریم مسجد کے مدرسہ میں دینیات کے زیر اہتمام مدرسہ میں درس دیتے ہیں ۔مذکورہ مدرسہ میں بچوں کو دینی تعلیم کے ساتھ ساتھ قرآن مجید حفظ بھی کرایاجاتاہے۔ان کے بھائی حافظ منور بھی کئی سال سے تراویح پڑھاتے ہیں،فی الحال قرآن کاٹیوشن سے گزربسر ہورہاہے۔

حاجی اسماعیل حاجی الاناسینی ٹوریم مسجد میں مقامی کارپوریٹر مفتی سفیان ونو بھی نماز تراویح میں تقریباً چھ رکعتوں میں قرآن سناتے ہیں ،سفیان نے  پہلی تراویح ۱۹۹۳ میں پڑھائی تھی، تب وہ گیارہ سال کے تھے   اُس کے بعد سے مسلسل پڑھا رہے ہیں.درمیان میں 6 سال الگ الگ ملکوں میں تراویح پڑھانے کا موقع ملا۔ چار سال کویت ایک سال ہانگ کانگ ایک سال برازیل میں بھی پڑھائی ہے۔

 مفتی سفیان نے (اسلامی فقیہ) دارالعلوم کنٹھاریا بھڑوچ گجرات سے فارغ ہوئے،حافظ قرآن مسجد الحرام، مکہ مکرمہ سعودی عرب ،انہوں نے  ایم بی اے (ہیومن ریسورس) مہاتما گاندھی یونیورسٹی سے کیا اور عہدوں 2017 میں  وارڈ 179 سے میونسپل کارپوریٹر منتخب ہوئے تھے۔متعدد عہدوں پر فائز رہے ہیں۔ ممبئی میں  بانی اور چیئرمین ونو فاؤنڈیشن کے اعزازات اور ایوارڈز برٹش پارلیمنٹ لندن میں ہیرو لندن کے میئر کے ذریعہ مہاتما گاندھی نوبل ایوارڈحاصل ہوا۔