ممبئی میں جھوپڑیوں کی آبادکاری کامسئلہ

Maharashtra

ممبئی میں جھوپڑیوں کی آبادکاری کامسئلہ

ہزاروں بے گھر،شیخ مصری میں سینکڑوں مکین کرایہ سے محروم ،سوسائٹی ممبران فرار،عید بعد اندولن

 

ممبئی،25اپریل(یواین آئی)مہاراشٹر قانون ساز اسمبلی میں وزیراعلی ادھوٹھاکرے کی جھگی جھوپڑپٹی آبادکاری اسکیم (ایس آراے)کے تحت مکینوں کو ہرممکن راحت فراہم کی یقین دہانی کے باوجود ایس آراے کے افسران مسئلہ سے چشم پوشی کیے ہوئے ہیں،اس کی وجہ سے ہزاروں مکین بلڈرکے ذریعے دیئے جانے والے کرایے سے محروم ہیں اورتعمیراتی کاموں میں تاخیر نے انہیں ڈپریشن میں۔ مبتلا کردیا ہے۔لیکن حکام کارروائی کے بجائے ٹال مٹول کی پالیسی اپنائےہوئے ہیں۔

ان جھوپڑاایس آر اے اسکیم کے تحت  متعد سوسائٹییوں میں سے ایک جنوب وسطی ممبئی کے انٹاپ ہل کی شیخ مصری کوآپریٹو سوسائٹی ہے،جوکہ نیلم سوسائٹی پر واقع ہے۔مذکورہ سوسائٹی کے عہدیداران  فاروق قریشی، ریاض سلطان خان،وکیل شفیع شیخ بھی شامل ہیں،جوکہ وومکار بلڈنگ اورسوسائٹی کے عہدیداران فرار ہیں،ایس آر اے انتظامیہ  نئی کمیٹی تشکیل نہیں دے رہی ہے۔بلکہ تقریباً بارہ سال سے بے گھر یہاں کے مکینوں کو ڈھائی تین سال سے کرایہ بھی نہیں  دیاجارہاہے کہ کیونکہ اوماکار کے بابو بھائی ای ڈی کے مبینہ معاملہ میں جیل میں ہیں۔اس طرح غریب عوام ظلم وبربریت کاشکار ہیں اور اپنے گھروں سے 12سال سے محروم ہیں۔ان کی کوئی بھی فریاد سننے والا نہیں ہے،اس طرح لوگوں  کی زندگی کے ساتھ کھیلاجا رہا ہے۔

شیخ مصری ایس آر اے اسکیم کے ایک مکین لیاقت شیخ کا کہناہے،12 سال کا عرصہ گزار چکاہے،ہم مایوس ہیں کوئی ہماری بات سننے اور انصاف دینے والا.نظر آتا ہے،مقامی ایم ایل اے کیپٹن تمل سالوین نے ایوان میں شیخ مصری سوسائٹی کامسئلہ ایوان میں اٹھایا عام متوسط ​​طبقے کے ہندوستانیوں کا ایک گھر کا خواب برسوں کی محنت کے بعد تباہ ہو گیا اور اب ہماری شکایت اور درد سننے والا کوئی نہیں ہے،ایس آر اے میں جیسے صرف بلڈروں کی شنوائی ہوتی ہے اور غریب کھوپڑاواسیوں کی کوئی نہیں نہیں سننا چاہتا ہے،بلکہ وہ بارہ سال سر دربدر کی خاک چھان رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہاکہ 99فیصد مکینوں نے  مکانات اومکار کے رشتہ داروں اور ڈویلپرز کے حوالے کیے تھے، ہم شیخ مصری SRA CHS کے کل 253 ممبرس ہیں،   2010 میں بلڈر کے ساتھ معاہدے پر دستخط کیے گئےہیں، اس معاہدے کے مطابق کرایہ کی بنیاد پر چھوڑ رہے ہیں۔  لیکن معاہدے کے مطابق بلڈر مکینوں کو 24 مہینوں میں ایس آر اے فلیٹس دینے کا وعدہ کرتا ہے، اب 5 سال سے بلڈر کے پاس سٹاپ رینٹ ہے اور مکین کرایہ سے محروم ہیں۔ سوسائٹی  ممبران نے تمام کرایہ داروں کو دھوکہ دیاہے۔ اور بغیر کسی الیکشن کے وہاں کی اپنی سوسائٹی بنا لی ہے، وہ 253 کرایہ داروں کی زندگی اجیرن ہوچکی ہے اوروہ ذہنی تناؤ میں زندگیاں گزر رہے ہیں۔  شیخ مصری SRA پروجیکٹ پچھلے بارہ سالوں سے زیر التوا ہے۔عید بعد مظاہروں اور دھرنے کیے جائیں گے تاکہ انتظامیہ کی آنکھیں کھلیں۔