معاشرتی زندگی میںشادی بیاہ کے موقع پر خرافات و بے جا رسومات سے بچیں ۔ علماء کرام کی مسلمانوں سے اپیل

Maharashtra

  معاشرتی زندگی میںشادی بیاہ کے موقع پر خرافات و بے جا رسومات سے بچیں ۔ علماء کرام کی مسلمانوں سے اپیل

 

جمعیۃ علماء کے زیر اہتمام دھرم آباد ضلع ناندیڑ میں جلسہ اصلاح معاشرہ

   ناندیڑ ۔12؍ جنوری 2022( پریس ریلیز) مسلم معاشرہ کا المیہ یہ ہے کہ ہم نے اپنے غلط رویوں، نظریات اور بعض حالات کی بنا پراپنے بچوں کی شادیاں کرنے میں تاخیر کرتے ہیں جس کی وجہ سے ہے ہمارے بہت سے نو جوان غلط لوگوں کی صحبت میں پڑکر اخلاقی برائیوں کے شکار ہو جاتے ہیں یا پھر انٹر نیٹ یا موبائل کے سہارے غلط کاموں میں پڑ کر بے شرمی و بے حیائی کو فروغ دینے کا ذریعہ بن جا رہے ہیں موجودہ حالات میں اپنے بچوں کو ان سے دور رکھنا وقت کی اہم ضرورت ہے ۔ان خیالات کا اظہارمولانا محمدعثمان فیصل قاسمی صاحب( صدر جمعیۃعلماء ضلع ناندیڑ )نے گذشتہ کل جمعیۃ علماء کے زیر اہتمام مسجد بلال دھرم آباد ضلع ناندیڑ میں منعقدہ  جلسہ اصلاح معاشرہ وسیرت النبی ﷺ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

 انہوں نے اپنے تفصیلی خطاب میںفر مایا کہ معاشرہ کی اصلاح اسوہ رسول ﷺ کی پیروی میں ہے،شادی بیاہ میں خرافات و بے جا رسومات سے بچنے کی تاکید کرتے ہوئے معاشرتی زندگی کو درست کرنے پر زور دیتے ہوئے بتایا کہ گذشتہ تقریبا ایک مہینہ سے صوبائی جمعیۃ علماء کی نگرانی میں ہمارے صدر محترم مولانا حافظ محمد ندیم صدیقی صاحب ( صدر جمعیۃ علماء مہا راشٹر ) کی ہدایت کے مطابق پوری ریاست میں جلسہ اصلاح معاشرہ اور سیرۃ النبیﷺ کی مہم چلائی جا رہی ہے اسی بابت دھرم آباد میں اس پرو گرام کا انعقاد عمل میں آیا ہے ۔

 
اجلاس کا آغاز قر آن کریم کی تلاوت اور نعتیہ کلام سے ہوا ،قاری محمد اسعد صاحب صمدی( نائب صدر جمعیۃ علماء مرہٹواڑہ) نے اجلاس کی صدارت فر مائی، جناب سدی سلیم صاحب دیشمکھ( نائب صدرجمعیۃ علماء ضلع ناندیڑ )نے جمعیۃ اور اکابرین کی قربانیوں کا تذکرہ کرتے ہوئے انسانیت،اورخدمت خلق پر مؤثر روشنی ڈالی، مولانا مجاہد یار خان صاحب( سیکریٹری جمعیۃ علماءضلع ناندیڑ) نے سیرت کے مختلف گوشوں پر تفصیلی روشنی ڈالی اور کہا کہ زندگی کے تمام گوشوں میں کامیابی کے لیے نبی ﷺ کے اسوہ کو ہی اپنانا ہوگا، اس اجلاس میں جمعیۃ علماء تعلقہ دھرم آباد کے صدر،جنرل سیکریٹری،عہدیداران و جمیع اراکین،و معززین شریک تھے۔
   معاشرتی زندگی میں شادی بیاہ کے موقع پر خرافات و بے جا رسومات سے بچیں ۔ علماء کرام کی مسلمانوں سے اپیل

   ناندیڑ ۔12؍ جنوری 2022( پریس ریلیز) مسلم معاشرہ کا المیہ یہ ہے کہ ہم نے اپنے غلط رویوں، نظریات اور بعض حالات کی بنا پراپنے بچوں کی شادیاں کرنے میں تاخیر کرتے ہیں جس کی وجہ سے ہے ہمارے بہت سے نو جوان غلط لوگوں کی صحبت میں پڑکر اخلاقی برائیوں کے شکار ہو جاتے ہیں یا پھر انٹر نیٹ یا موبائل کے سہارے غلط کاموں میں پڑ کر بے شرمی و بے حیائی کو فروغ دینے کا ذریعہ بن جا رہے ہیں موجودہ حالات میں اپنے بچوں کو ان سے دور رکھنا وقت کی اہم ضرورت ہے ۔ان خیالات کا اظہارمولانا محمدعثمان فیصل قاسمی صاحب( صدر جمعیۃعلماء ضلع ناندیڑ )نے گذشتہ کل جمعیۃ علماء کے زیر اہتمام مسجد بلال دھرم آباد ضلع ناندیڑ میں منعقدہ  جلسہ اصلاح معاشرہ وسیرت النبی ﷺ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

 انہوں نے اپنے تفصیلی خطاب میںفر مایا کہ معاشرہ کی اصلاح اسوہ رسول ﷺ کی پیروی میں ہے،شادی بیاہ میں خرافات و بے جا رسومات سے بچنے کی تاکید کرتے ہوئے معاشرتی زندگی کو درست کرنے پر زور دیتے ہوئے بتایا کہ گذشتہ تقریبا ایک مہینہ سے صوبائی جمعیۃ علماء کی نگرانی میں ہمارے صدر محترم مولانا حافظ محمد ندیم صدیقی صاحب ( صدر جمعیۃ علماء مہا راشٹر ) کی ہدایت کے مطابق پوری ریاست میں جلسہ اصلاح معاشرہ اور سیرۃ النبیﷺ کی مہم چلائی جا رہی ہے اسی بابت دھرم آباد میں اس پرو گرام کا انعقاد عمل میں آیا ہے ۔  

اجلاس کا آغاز قر آن کریم کی تلاوت اور نعتیہ کلام سے ہوا ،قاری محمد اسعد صاحب صمدی( نائب صدر جمعیۃ علماء مرہٹواڑہ) نے اجلاس کی صدارت فر مائی، جناب سدی سلیم صاحب دیشمکھ( نائب صدرجمعیۃ علماء ضلع ناندیڑ )نے جمعیۃ اور اکابرین کی قربانیوں کا تذکرہ کرتے ہوئے انسانیت،اورخدمت خلق پر مؤثر روشنی ڈالی، مولانا مجاہد یار خان صاحب( سیکریٹری جمعیۃ علماءضلع ناندیڑ) نے سیرت کے مختلف گوشوں پر تفصیلی روشنی ڈالی اور کہا کہ زندگی کے تمام گوشوں میں کامیابی کے لیے نبی ﷺ کے اسوہ کو ہی اپنانا ہوگا، اس اجلاس میں جمعیۃ علماء تعلقہ دھرم آباد کے صدر،جنرل سیکریٹری،عہدیداران و جمیع اراکین،و معززین شریک تھے۔