ہر عالمِ دین کی ذمّہ داری ہے کہ اپنے حلقے میں بے جا رسم و رواج کو ختم کرنے کی ہر ممکن کوشش کرے

Maharashtra

  ہر عالمِ دین کی ذمّہ داری ہے کہ اپنے حلقے میں بے جا رسم و رواج کو ختم کرنے کی ہر ممکن کوشش کرے

جمعیۃ علماء کے زیر اہتمام دریا پور ضلع امراوتی میں جلسہ اصلاح معاشرہ اور ہماری ذمہ داریاں

 

   امراوتی ۔6؍ جنوری 2022۔ ( پریس ریلیز ) جس معاشرے میں جہالت اور لا شعوری کا جتنا زیادہ غلبہ ہوگا، اس میں من گھڑت رسموں کے اثرات اتنے زیادہ ہوں گے۔ جس معاشرے میں صحیح علمِ دین ہوگا، اس میں رسمیں اپنی موت آپ مر جائیں گی۔ بے جا رسوم و رواج کا دنیوی نقصان یہ ہوتا ہے آدمی کی زندگی تنگ ہو کر رہ جاتی ہے۔ موجودہ حالات میں آج ہر عالمِ دین کی ذمّے داری ہے کہ اپنے اپنے حلقے میں بے جا رسم و رواج کو ختم کرنے کی ہر ممکن کوشش کرے۔ یہ باتیں کل گذشتہ  جمعیۃ علماء کے زیر اہتمام مسجد بلال بنوسہ دریاپور ضلع امرواتی میںاصلاح معاشرہ بیداری مہم اور ہماری ذمہ داریاںکےعنوان سے منعقد ہ اجلاس سے مولانا رشید قاسمی صاحب و دیگر علماء کرام نے خطاب کرتے ہوئے کیا ،انہوں نےتربیت اولاد،اتحاد،والدین کے حقوق ،پڑوسیوں کے حقوق،اور معاشرہ میں کس طرح سدھا ر آے اس پر توجہ دلائی۔

مولانا عبد العظیم صاحب امام وخطیب مدینہ مسجد بنوسہ نے اکابرین جمعیۃ علماء کی قربانیاں،اوراصلاح معاشرے پر روشنی ڈالتے ہوئے نوجوانوں سے اپیل کی کہ منکر کاموں میں اپنے اوقات ضائع کرنے کے بجائے نیکی کے کاموں کی طرف توجہ دیں ۔ مولانا ذکی اللہ خان اشاعتی نے جمعیۃ علماء کی کارکردگی اور خدمات پر روشنی ڈالتے ہوئے فر مایا کہ موجودہ حالات میں جمعیۃ علماء سے جڑکر رہیں اور جمعیۃ علماء جب بھی آواز دے تو اس کا ساتھ دیں۔ اس وقت ہمارے صوبائی ذمہ داران حضرت مولانا محمد ندیم صدیقی صاحب( صدر جمعیۃ علماء مہاراشٹر) کی ہدایت کے مطابق علاقہ ودربھ جلسہائے اصلاح معاشرہ اور سیرۃ النبیﷺ کے پرو گرامس منعقد کئے جا رہے ہیں جن کی سر پرستی علاقہ ودربھ کے جمعیۃ علماء کے جنرل سکریٹری مولانا مفتی محمد روشن شاہ قاسمی صاحب( صدر دینی تعلیمی بورڈ مہاراشٹر ) کررہے ہیں ،اللہ تعالی اس پروگراموں کوکامیابی عطاء کرے اور عوام کے لئے نفع بخش بنائے