ملک کے پہلے ڈرائیورینگ انسٹیٹیوٹ کا لاتور مرکزی وزیر گڑکری کے ہاتھوں افتتاح.

Maharashtra

ملک کے پہلے ڈرائیورینگ انسٹیٹیوٹ کا لاتور مرکزی وزیر گڑکری کے ہاتھوں افتتاح.

مسلم نوجوانوں کے لیے خصوصی موقع.

لاتور (قاضی مخدوم) ملک کے پہلے سرکاری ڈرائیورینگ انسٹی ٹیوٹ کا افتتاح آج لاتور میں مرکزی وزیر نیتن گڑکری کے ہاتھوں عمل میں آیا فینکس فاونڈیشن اور آیشر کمپنی کے تحت اس انسٹی ٹیوٹ میں نوجوانوں کو شعبہ ڈرائیورینگ کی تربیت کے ساتھ آر ٹی او کا لائسنس بھی جاری کیا جائے گا سابق ایم ایل اے پاشاہ پٹیل کی سرپرستی میں جاری اس انسٹی ٹیوٹ کو مرکزی حکومت کی جانب سے سےسترہ کڑور کا فنڈ فراہم کیا گیا ہے جبکہ آیشر کمپنی نے دو کروڑ فراہم کئے ہیں.

افتتاح کے موقع پر گڑکری نے اپنے خطاب میں کہا کہ آج بھی ملک کو 25 لا کھ ڈرائیور کی ضرورت ہے لیکن ہمارے پاس اس طرح کے ادارے نہ ہو نے سےمشکل پیش آرہی ہے اور پاشاہ پٹیل کے اس ٹریننگ سنٹر سےمہاراشٹر کے نوجوانوں کو راست فائدہ حاصل ہو گا. واضح ہو کہ اس شعبہ سے مسلم بڑے پیمانے پر منسلک ہیں .اپنے خطاب میں گڑکری نے ملک میں بڑھتے سڑک حادثات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ہر سال پانچ لاکھ افراد اس میں زخمی ہوتے ہیں اور دیڑھ لاکھ ہلاک اس لیے اب حکومت روڑ سیفٹی پر خصوصی توجہ دیتے ہوئے اسکول کی سطح سے بیداری مہم کا آغاز کر رہی ہے.

اس موقع پر انہوں نے ملک بھر میں ڈرائیورینگ انسٹی ٹیوٹ کھولنے کا اعلان کیا.اپنی تقریر میں میں انہوں نے کھیتی کے نئے طریقوں پر بھی کھل کر بات کی جبکہ ایندھن کے طور پر سی این جی، ایتھینال  اور برق کو مستقبل کا ایندھن کہا.اس پروگرام سے پاشاہ پٹیل نے خطاب کرتے ہوئے فاونڈیشن کی مفصل کارکردگی پیش کی.

پروگرام کو کامیاب بنانے میں پرویز پٹیل. حسن پٹیل ادارے کے پرنسپل اور اسٹاف نے محنت کی. پروگرام میں مہاراشٹر بھر سے ممبران پارلیمنٹ اور ارکان اسمبلی کے علاقے کے افراد کثیر تعداد میں موجود تھے.