لکھیم پور کسانوں پر ہوئے تشدد کو مہا وکاس آگھاڑی کے بند مکمل کامیاب

Beed

لکھیم پور کسانوں پر ہوئے تشدد کو مہا وکاس آگھاڑی کے بند مکمل کامیاب

بیڑ (  رئیس خان فتح آبادی  ) مہا وکاس اگھاڑی (راشٹر وادی کانگریس پارٹی ،شیو سینا،کانگریس پارٹی ) حکومت نے اس ملک میں کسانوں کو زراعت سے نکالنے کی پالیسی اختیار کی ہے۔اتر پردیش میں ایک وزیر کے بے رحم بیٹے نے کسانوں  کو گاڑی سے کُچل دیا۔اس کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے مہاوکاس اگھاڑی نے کسانوں کے پیچھے مضبوطی سے کھڑے ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔ کسان مخالف مرکزی حکومت کے خلاف احتجاج کے لیے آج مہاراشٹر بند کی پُر زور اپیل کی گئی تھی جس میں بیڑ ضلع و بیڑ تعلقہ مکمل بند  صد فی صد کامیاب رہا۔ مزید معلومات کے مطابق  لکھیم پور کھیری میں کسانوں کو چلتی گاڑی سے روند کر ہلاک کیا تھا اس دردناک واقع کو لیکر آج مہاراشٹر کے اقتدار پر قابض مہاوکاس آگھاڑی کی جماعتوں شیو سینا ۔

 

کانگریس اور راشٹروادی کانگریس پارٹی کی جانب سے مہاراشٹر بند کا اعلان کیا گیاتھا جس کا ضلع بھر میں جزوی اثر رہا ۔شہر میں راشٹروادی کانگریس پارٹی کے رکن اسمبلی سندیپ شرساگر اور شیوسینا کے ضلع صدر کنڈلک کھانڈے کی جانب سے شیواجی کے مجسمہ سے لیکر تحصیل دفتر تک موٹر سائیکل ریالی نکالی گئی اور کانگریس پارٹی کے رہنما رویندر دلوی کی قیادت میں ضلع کلکٹر دفتر کے روبرو مون برت رکھا گیا۔اور مرکزی حکومت کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے ضلع انتظامیہ کو میمورنڈم دیاگیا۔اس موقع پر سابقہ رکن اسمبلی سید سلیم۔ سنیل دھانڈے ۔کانگریس کے دادا صاحب منڈے۔ادریس ہاشمی۔کمل نمباڑکر۔ایڈوکیٹ ہیما تائی پیمپلے ۔سابقہ رکن بلدیہ خورشید عالم۔شہر میں کاروباری ادارے بھی جزوی طور پر بند رہے ۔آخر میں سبھی جماعتوں کی جانب سے ہلاک کسانوں کو خراج تحسین پیش کیاگیا