خطہ کوکن میں سیلا ب متاثرین کی باز آباد کاری کے لئے جمعیۃ علما ء جمعیۃ علماء مہا راشٹر کی نگرانی میں مکانات کی تعمیر کا آغازاء

Maharashtra

خطہ کوکن میں سیلا ب متاثرین کی باز آباد کاری کے لئے

جمعیۃ علما ء جمعیۃ علماء مہا راشٹر کی نگرانی میں مکانات کی تعمیر کا آغازاء

 

ہند و  تعلقہ مہاڈ کی وہور ،کیمبر لی،سو و دیگر بستیوں میں مولانا ندیم صدیقی کے ہاتھوں15مکانات کی سنگ بنیاد

  ممبئی ۔7؍ اکتوبر ( پریس ریلیز) جمعیۃ علماء ہند کا یہ طرہ امتیاز رہا ہے کہ جب بھی ملک کے کسی بھی حصے میں بسنے والے مسلمان آفت سماوی ،سیلاب ،زلزلہ ،طوفان یا فرقہ وارانہ فسادات کے شکار ہوئے ہیں تو جمعیۃ علماء سب سے پہلے آفت زدوں کی راحت رسانی میں پیش پیش رہی ہے اور ان کی ہر ممکن امداد کرکے ان کو اپنے پیروں پر دوبارہ کھڑا کیا ہے اسی روایت کو بر قرار رکھتے ہوئے حضرت مولانا سید محمود اسعد مدنی صاحب( صدر جمعیۃ علماءہند) کے حکم پرخطہ کوکن کے تعلقہ مہاڈ کی وہور ،کیمبر لی،سو و دیگرسیلاب زدگان کی بازآباد کاری کے لئےجمعیۃ علماء ہند وجمعیۃ علماء مہا راشٹر کی جا نب سے مکانات کی تعمیر کا کام شروع کیا گیا ہے،آج یہاں جمعیۃ علماء مہا راشٹر کے صدر مولانا حافظ محمد ندیم صدیقی صاحب نے15مکانات کی سنگ بنیاد رکھی ، مولانا قاضی حسین ماہمکر فلاحی ( صدر جمعیۃ علماء ضلع رائے گڑھ ) مولانا محمد اعجاز پنہالکر ( ناظم جمعیۃ علماءعلاقہ کوکن ) جناب عبد الروف فجندار ( چیرمین فجندار ہائی اسکول و جونیئر کالج )مولانا سرفراز جلگائونکر و دیگراراکین جمعیۃ علماءضلع رائے گڑھ موجود تھے۔ اس موقع پر فجندار ہائی اسکول و جونیر کالج وہور مہاڈ میں منعقدہ اجلاس سےجمعیۃ علماء مہا راشٹر کے صدر مولانا حافظ محمد ندیم صدیقی صاحب نے مہا راشٹر سمیت کوکن سیلاب زدگان کے لئے جمعیۃعلماء مہا راشٹر کی نگرانی میں کی گئی خدمات پر روشنی ڈالتے ہو ئے فر مایا کہ ہماری زندگی کا مقصداللہ کی عبادت، انسانیت کی خدمت اورملک سے محبت ہو نی چا ہئے انہوں نے یہ بھی کہا کہ جو لوگ اللہ کے بندوں کے تعاون میں لگے رہتے ہیں اللہ تعالی ان کی مدد کرتا ہے اور غیب سے ان کی ضرورتوں کو پورہ کرتا ہے ۔

مولانا قاضی حسین ماہمکر فلاحی ( صدر جمعیۃ علماء ضلع رائے گڑھ ) نے علماء کرام اور مہمانوںکا استقبال کیا اور جمعیۃ علماء ضلع رائے گڑھ کی سیلاب کے مو قع پر متاثرین کے لئے کی گئی خدمات پر مفصل روشنی ڈالی اور بتایا کہ اس وقت جمعیۃ علماء کی جا نب سے سیلاب کی وجہ سے تباہ حال اوربے گھر ہوئے لوگوں کی باز آباد کاری کے لئے مکانا ت کی تعمیر کا کام شروع کیا گیا ہے ۔ساوتری ندی کے قرب و جوار میں واقع بستی جہاں کے مکین تقریبا ہر سال سیلاب سے متاثر ہوتے ہیں ۔ ان کی مستقل باز آباد کاری کے لئے،ممبئی گو انیشنل ہیوے 66 کے قریب وہور میں جمعیۃ علماء زمین خرید کر ان کے لئے مکانات بنارہی ہے ، ایسے ہی دیگر بستیوں میں جہاں سیلاب سے کئی مکانات منہدم ہو گئے تھے وہاں بھی تعمیری کام شروع کیا گیا ہے۔فنجندہائی اسکول کے چیرمین جن کی علاقے میں بڑی خدمات ہیں اور جنہوں نے اپنے اسٹاف سمیت جمعیۃ علماء کی نگرانی میں سیلاب متاثرین کی بھر پور امداد کی ہے انہوں نےجمعیۃ علماء مہا راشٹر کی نگرانی میں متاثرین کی باز آباد کاری کے لئے بنائے جارہے مکانات ودیگر نمایاں خدمات کی ستائش کی اور کہا کہ ہم ہروقت جمعیۃ علماء کے ساتھ کھڑے ہیں اور آئندہ بھی کھڑے رہیںگے۔

واضح رہے کہ ماہ جولائی 2021 کے آخرمیں موسلا دھار بارش اور ندیوں میں طغیانی کی وجہ سے کوکن سمیت مہاڈ ،چپلون علاقوں میںبھیانک اور تباہی خیز سیلاب آیا  تھاجس میں بے انتہاء جانی و مالی نقصان ہوا تھا،لاکھوں لوگ دوکان و مکان اور کاروبار سے یکسر محرو م ہوگئے تھے ۔ جمعیۃ علماء نے سیلاب سے تباہ حال لوگوں کی امداد و راحت رسانی اور اشیاء خورد و نوش کی فراہمی کا کام شروع کر دیا تھااور ضلع جمعیتوں کے تعاون سے ٹرک ، ٹیمپو اور گاڑیوں کے ذریعہ بھاری تعداد میں اشیاء خورد و نوش اور ضروریات زندگی کے جملہ سامان سیلاب متاثرہ  علاقوں میں پہونچا ئے گئےاور مقامی جمعیتوں کے ذمہ داروں کی نگرانی میں تقسیم کئے گئے۔بڑی تعداد میں راشن کٹس ، کچن سیٹ و برتن سیٹ تقسیم کئے گئے ،چھوٹے تاجروں کو انکے پیروں پر کھڑا کرنے کئے لئے مالی امداد کی گئی اور اب مکانات کی تعمیر کا کام  شروع کیا گیا ہے جو بتدریج جاری رہے گا ،دعاء ہے اللہ اس کام کو پائے تکمیل تک پہونچائے اور متاثرین  کے لئے راحت کا ذریعہ بنائے ۔اجلاس میں محترم ندیم بھائی سکریٹری( فجندار ہائی اسکول )جناب راحیل فجندار صاحب۔پرنسپل فجندار ہائی اسکول وکالج وہور،جناب حکیم سر صاحب پرنسپل وومن ڈگری کالج وہور،جناب فاروق سید،مولانا عرفان ،مفتی زبیر پنویل نائبین صدور جمعیۃ علماء ضلع رائیگڈھ مفتی رفیق پورکر صاحب نائب صدر دینی تعلیمی بورڈجمعیۃ علماء مہاراشٹر اور تعلقہ جمعیتوں کے ذمہ داران موجود تھے۔
محترم ایڈیٹر صاحب برائے مہر با نی اس پریس ریلیز کو اپنے موقر روز نامہ میں شائع فرمائیں