آن لائن یوٹیوب مشاعرہ کا کامیاب انعقاد

National

آن لائن یوٹیوب مشاعرہ کا کامیاب انعقاد

٢/اکتوبر۔ بابائے قوم مہاتما گاندھی جی کے یوم ولادت کے ضمن میں ایجوکیشن ٹیوب اس یوٹیوب چینل پر آن لائن یوٹیوب مشاعرے کا کامیاب انعقاد عمل میں آیا۔ یہ مشاعرہ اس لیے بھی اہمیت کا حامل رہا کیونکہ اس کی صدارت مشہور و معروف شاعر، افسانہ نگار، مضمون نگار عالی جناب منیب حنفی صاحب فرمارہے تھے۔ محب اردو جناب اقبال انصاری صاحب نے اس کامیاب مشاعرے کی نظامت بخوبی انجام دی۔ مشاعرے کا آغاز ممبئی کے شاعر محترم احتشام نشتر صاحب نے اپنی نعت پاک کے ذریعے کیا۔

 

ساری مخلوق میں ہے آپ کا اونچا رتبہ

آپ ہے نبیوں کے سردار رسول عربی

 

نعت پاک کے بعد ناظم مشاعرہ اقبال انصاری صاحب نے اپنی ایک طرحی غزل پیش کی۔

 

انا سے اپنی لڑے اور یہ کمال کرے

اسے کہو کہ تعلق کو پھر بحال کرے

 

اس کے بعد نوجوان شاعر ماجد خان ماجد پرتوری نے اپنی مترنم آواز سے ناظرین کا دل جیت لیا۔

 

بدل جائے گی زندگانی تمہاری

نمازوں سے لو تم لگا کر تو دیکھو

 

مشاعرے کی زینت میں چار چاند لگاتے ہوئے انصاری جاوید صاحب پربھنی نے اپنے اعلیٰ کلام سے سبھی آن لائن ناظرین کا دل موہ لیا۔ ان کے اس شعر پر تو بہت داد وتحسین سے نوازا گیا کہ،

 

آ بھی جاؤ کہ منتظر ہوں میں

دوریاں دل کے پار لگتی ہے

 

آپ اپنے کلام کے ذریعے لوگوں کا اعتبار حاصل کر لیتے ہیں تو آپ کے حصے میں ان کی بے پناہ محبت کی دولت خود بخود آجاتی ہے۔ آپ کو عزت و وقار اور قدر و منزلت کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے۔ شہر حیدرآباد کے مشہور و معروف شاعر ، نوجوان دلوں کی دھڑکن جناب عارف سیفی حیدرآبادی نے مشاعرے کو کامیابی کی بلندیوں تک پہنچانے میں بہت اہم کردار ادا کیا۔ ان کی شاعری سے ناظرین بہت محفوظ ہوئے، بالخصوص ان اس شعر کو خوب سراہا گیا جس پر اب تک شوشل میڈیا پر ہزاروں میں ریلس بھی بن چکے ہیں۔

 

چاند سمجھا تھا جسے ٹوٹتا تارا نکلا

ایک مسیحا تھا وہ قاتل جو ہمارا نکلا

تم جسے پہن کے آئے ہو دکھانے مجھ کو

کیا کرو گے وہ اگر میرا اتارا نکلا

 

اس کے بعد  خوابوں کے شہر ممبئی کے مشہور شاعر محترم احتشام نشتر صاحب نے ممبئی ہی کی طرح اپنے کلام سے سب کو اپنی جانب راغب کر لیا۔

 

نفس اور ہوس کی چاہت میں

سن لے وہ جو پڑا ہے الفت میں

دوست ہوتا نہیں ہے نا محرم

قبر کا سانپ ہے حقیقت میں

 

صدارتی کلام پیش کرتے ہوئے صدر مشاعرہ معزز ڈاکٹر منیب حنفی صاحب نے دیر تلک ناظرین کو اپنے کلام سے اپنے سحر میں باندھے رکھا۔ اپنی پر ترنم آواز کے جادو سے اس آن لائن مشاعرے کو جادوئی کامیابی عطا کی۔

 

وعدہ خلافی بڑا جرم ہے

ہتھیلی میں جنت دیکھاتے ہی وہ

اور ساتھ ہی ان کی اس غزل کو بھی بہت پسند کیا گیا،

امیروں کو بلاتے ہو ہر ایک تقریب میں لیکن

ضرورت مند لوگوں کی ضیافت کیوں نہیں کرتے

 

یہ آن لائن مشاعرہ ابھی بھی ایجوکیشن ٹیوب اس یوٹیوب چینل پر موجود ہے۔ آپ سرچ انجن میں آن لائن یوٹیوب مشاعرہ ایجوکیشن ٹیوب لکھ کر اسے سرچ کرسکتے ہیں اور اس کامیاب مشاعرے سے لطف اندوز ہو سکتے ہیں۔

مشاعرہ کو دیکھنے کے لئے یہاں پر کلک کریں

 

Click here for Watch Mushaira