ایک اوربے گناہ پندرہ سالوں کے بعد گلبرگہ سینٹرل جیل سے رہا ء

National

ایک اوربے گناہ پندرہ سالوں کے بعد گلبرگہ سینٹرل جیل سے رہا ء

دفتر جمعیۃ علماء مہاراشٹر پہونچ کرصوبائی صدر مولانا ندیم صدیقی اور لیگل ٹیم کا شکریہ ادا کیا

ممبئی ۔ 29؍ستمبر(پریس ریلیز )دہشت گردی کے جھوٹے الزام میںگذشتہ ۱۵؍ سالوں سے قید و بند کی صعوبتیں جھیلنے والے ایک اور بے گناہ عبد الرحمن عرف سمیع ولد عبد الغفار کی جمعیۃعلماء مہا راشٹر کی کامیاب جدو جہد اور کو ششوںکے نتیجہ میں گلبرگہ سینٹرل جیل سے رہائی عمل میں آئی ۔ جیل سے رہا ہو نے بعد ملزم عبد الرحمن اور ان کے والدنے دفتر جمعیۃ علماء مہا راشٹر واقع زین العابدین بلڈنگ ابراہیم رحمت اللہ روڈ بھنڈی بازار ممبئی پہونچ کر مولانا حافظ محمد ندیم صدیقی صاحب ( صدر جمعیۃ علماء مہا راشٹر ) اور لیگل ٹیم کے سکریٹری ایڈوکیٹ پٹھان تہور خان ،ایڈوکیٹ عشرت علی خان و دیگر ذمہ داروں کا شکریہ اداکیا اور گلدستہ و شیرینی پیش کی اور کہا کہ جمعیۃ علماء مہا راشٹر کی جہد مسلسل اور کوششوں سے خدائے وحدہ لاشریک نے ہمیں ظلم و زیاتی کے سلسلہ دراز سے نجات عطاء  فرمائی ہے جس سے ہمارے والدین سمیت اہل خاندان کو بڑی راحت اور مسرت حاصل ہوئی ہےاللہ تعالیآپ لوگوں کو جزائے خیر عطاء فرمائے ۔
اس موقع پر عبد الرحمن نے بتایا کہ قید و بند کی زندگی نے میرا کیئریئر تباہ و تباہ و بر باد کر دیا ہے ،سماجی ،معاشی اور جسمانی تکالیف کی انتہاء ہو گئی تھی جس طریقے کے سنگین ترین دفعات مثلا دہشت گردی اور ملک کے خلاف جنگ وبغاوت ،دھماکہ خیز اشیاء کی برآمدگی، تعزیراتِ ہند اور یو اے پی اے کی مختلف ناقابلِ ضمانت دفعات لگاکر مقدمات در ج گئے گئے تھے ۔میںنے تو جیل سے باہرنکلنے کی امید ہی چھوڑ دی تھی لیکن جمعیۃ علماء مہا راشٹرکے ذمہ داران اور لیگل ٹیم کی مسلسل کو ششیں اور جدو جہد رنگ لائی اور جیل سے میری رہائی عمل میں آئی جس کے لئے میں حضرت مولانا سیدمحمود اسعدمدنی صاحب ( صدر جمعیۃ علماء ہند ) سمیت صوبائی جمعیۃ علماء کےعہدیدران اور لیگل ٹیم کے وکلاء کا بے حد ممنون و مشکور ہوں۔  
ملزم عبد الرحمن نے پندرہ سالہ قید و بند کی روز مرہ زندگی میں پیش آنے والے مظالم ، دہنی و جسمانی اذ یتیں، غیر انسانی سلوک ، خاص طور پر مسلم قیدیوں کے ساتھ جیل انتظامیہ جس طرح کا سلوک و برتائو کرتا ہے وہ ناقابل بیاں ہے ، جیل کے حالا ت اور پولیس کی ظلم و زیادتی دیکھ کر آدمی مرجانے بہتر سمجھتا ہے ،اس جیسے بے شمار درد انگیز حالات عبد الرحمن نے بیان کیا جسے سن کر جمعیۃ علماء کے ذمہ داران اور وہاں موجود لوگوں کی آنکھیں نم ہو گئیں ۔اس موقع پر جمعیۃ لیگل ٹیم کے سکریٹری ایڈوکیٹ پٹھان تہور خان ،ایڈوکیٹ عشرت علی خان،مولانا ارشد قاسمی آرگنائزر جمعیۃ علماء مہا راشٹر و دیگر موجود تھے۔