مسلم ریزرویشن کے تحفظ کیلئے گاندھی جی کے یوم پیدائش پر غیر مزاحمتی طرز پر تحریک کرینگے۔ پروفیسر الیاس انعامدار

Beed

مسلم ریزرویشن کے تحفظ کیلئے گاندھی جی کے یوم پیدائش پر

غیر مزاحمتی طرز پر تحریک کرینگے۔ پروفیسر الیاس انعامدار

بیڑ (رئیس خان فتح آبادی )لوک سینا تنظیم، مسلم ریزرویشن تحفظ جدودجہد مجلس و مسلم ریزرویشن فیصلہ کن تحریک کی جانب سے 2 اکتوبر کو مہاتما گاندھی کی یوم پیدائش دن سے مسلمانوں کے تعلیم میں ریزرویشن کے لئے غیر مزاحمتی تحریک کا آغاز کیا جائینگا اس طرح کی معلومات لوک سینا تنظیم کے صدر جناب پروفیسر الیاس انعامدار نے صحافیوں کو دی۔

 

مہاراشٹر میں سابقہ محاذ حکومت کی جانب سے مسلمانوں کے لئے ریزرویشن کا اعلان کیا گیا و عدالتِ عالیہ یعنی ہائی کورٹ کے جانب سے منظوری کے باوجود بھی مسلم ریزرویشن کی تعلق سے غیر ذمہ دارانہ رویہ اختیار کرنے والی موجودہ حکومت و ملک اور ریاست میں مسلم نوجواںوں کوہجومی تشدد کا شکار بنانے کے خلاف و اقلیتی طبقے کے تحفظ کے لئے جلد از جلد اقلیتی تحفظ قانون کی تالیف کی جائے و بیڑ ضلع کے ساتھ ریاست میں رواں تمام اردو بال واڑیوں میں کام کرنے والی خواتین کی کئی سالوں سے روکی گئی تنخواہیں فوراً ادا کی جائے و اردو بال واڑیوں کو آنگن واڑی کے طور پر منظوری دی جئے ان تمام مطالبات کو لے کر 2 اکتوبر کو مہاتما گاندھی کی یوم پیدائش کے موقع پر لوک سینا تنظیم، مسلم ریزرویشن تحفظ جدودجہد مجلس و مسلم ریزرویشن فیصلہ کن تحریک کی جانب تحریک کے آغاز کا اعلان لوک سینا تنظیم کے صدر جناب الیاس انعامدار انہوں نے کیا ہے۔ مزید کہتے ہونے پروفیسر انعامدار نے کہا کی ریاست کے تمام اضلاع میں اس قسم کے تحریکات کو متعلقہ ضلع کی عوام مضبوطی کے ساتھ قائم کریں اور خصوصی طور پر مسلم سماج اپنے اضلاع میں ضلع کلکٹر دفتر کے سامنے و تعلقہ جات میں  تحصیلدار دفتر کے سامنے غیر معیادی دھرنہ دیں اور غیر مزاحمتی تحریک انجام دیں۔ اس مزاحمتی تحریک میں تمام سیاسی جماعتوں و تنظیموں سے تعلق رکھنے والے کارکن و رہنما بھی زیادہ سے زیادہ تعداد میں شریک ہوں کیونکہ آنے والے کچھ دنوں میں پوری ریاست میں بلدیہ کے انتخابات ہونے والے ہیں۔ انتخابات سے پہلے جو سیاسی جماعت یا جو حکومت مسلمانوں کے حق میں ریزرویشن کو مختص کرینگی یا حاصل کرانے میں شامل ہونگی اسے ہی اس مرتبہ ملسم سماج انتخابات میں اپنے ووٹ دینگا اگر ہر مرتبہ کی طرح صرف وعدوں کے ذریعے ووٹ حاصل کرنے کی کوشش کی جائینگی تو مسلم سماج کے جانب سے انھین ووٹ نہیں ملینگا۔ اگر ریزرویشن نہیں دے سکتے تو مسلم سماج کا ووٹ بھی بھول جائیں۔ اس طرح کا مطالبہ سیاست دانوں کے سامنے رکھنے کے لئے مسلم عوام سے مطالبہ جناب الیاس انعامدار نے کیا ہیے۔