کورونا کے خلاف 100 دنوں تک جاری رہی جنگ، آخر کار اشون کی ہی ہوئی فتح

National

کورونا کے خلاف 100 دنوں تک جاری رہی جنگ، آخر کار اشون کی ہی ہوئی فتح

 

ڈاکٹر اشون کمار اوجھا رکسول کستوربا پلس ٹو اسکول کے انچارج ہیں

موتیہاری، 05 اگست: پتہ نہیں غلطی کہاں ہوئی لیکن میری رپورٹ کوویڈ پازیٹیو آئی۔ پہلے تو علامتیں سادہ تھیں لیکن جب مجھے سانس لینے میں دشواری ہوئی تو مجھے ایمس میں داخل کرایا گیا۔ وہاں کا ایک ایک لمحہ ایسا گزرتا تھا جیسے موت مجھے اپنی آغوش میں لینے کے لئے بے قرار ہو۔ مگر میں نے اپنے حوصلے کو کمزور نہیں پڑنے دیا۔ ہمیشہ بہتر زندگی گزارنے کے خواب دیکھاکرتا اور ہر ممکن مثبت سوچ کے سمندر میں غوطہ لگایا کرتا۔ نتیجہ تاخیر سے ہی سہی لیکن خوشگوار آیا۔ اب میں مکمل طور پر کورونا کے انفیکشن سے پاک ہوں۔ یہ باتیں رام گڑھوا بلاک کے بھالووہیہ گاؤں کے رہائشی اور رکسول کستوربا پلس ٹو اسکول کے انچارج ڈاکٹر اشون کمار اوجھا نے بتائی۔ وہ سو ویں دن صحت یاب ہونے کے بعد 30 جولائی کو ایمس سے واپس آئے ہیں۔

 

گھر میں ہوں یا باہر ہر جگہ یکساں طور پر کوویڈ قوانین پر عمل کریں:اشون نے بتایا کہ گھر میں اس سے پہلے اس کے دونوں چھوٹے بھائیوں کو کورونا انفیکشن ہوا تھا۔ دونوں گھر میں الگ تھلگ تھے۔ اس دوران میں نے کچھ غلطی کی، جس کی وجہ سے میں نے 100 دن ہسپتال میں گزارے۔ اپنے تجربے کی بنیاد پر، میں لوگوں کو بتانا چاہتا ہوں کہ گھر میں ہوں یا باہر ہر جگہ یکساں کووڈ قوانین پر عمل کریں۔ انفیکشن کے بعد لوگ اپنے گھروں میں علاحدگی اختیار تو کرتے ہیں، لیکن ان کے لیے ہر چیز کا انتظام الگ ہونا چاہیے۔ اس کے علاوہ صرف کسی ایک شخص کو ہی ان کو کھانا پہنچانا چاہیے۔ ان کا کام کرنے والے شخص کو بھی ہمیشہ اپنے ہاتھوں کو صاف کرتے رہنا چاہیے۔ سینیٹائزر کا استعمال بحالت مجبوری ٹھیک ہے مگر صابن سے ہاتھ دھونے کو بنیادی طورپر اہمیت دی جانی چاہیے۔

 

میں کوویڈ کی ویکسین ضرور لوں گا:اشون نے بتایا کہ وہ یقینی طور پر کوویڈ 19 کی ویکسین لیں گے۔ کوویڈ 19 ویکسین مکمل طور پر محفوظ اور موثر ہے۔ فی الحال یہ کوویڈ انفیکشن کو روکنے کا سب سے موثر طریقہ بھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ لوگوں میں یہ غلط فہمی پائی جاتی ہے کہ ایک بار اگر کسی کوکورونا ہو جائے گاتو پھر کوویڈ کا کوئی انفیکشن نہیں ہوگا۔ مگر ویکسین لینے سے ایسی خوفناک صورتحال کا باعث نہیں بنے گا۔ کوویڈ کی دونوں ویکسین لینے کے بعد بھی کورونا کے پروٹوکول پر عمل کرنا لازمی ہے۔

 

کورونا کے دوران ان باتوں کو ذہن میں رکھیں: (الف) ہمیشہ صاف ستھرے ماسک کا استعمال کریں۔(ب)بلا ضرورت باہر نہ نکلیں۔ (ج)دو افراد کے درمیان دو گز کا فاصلہ قائم رکھیں۔(د)اپنے ہاتھوں کو باقاعدگی سے صابن سے دھوئیں۔(ش)کورونا کی کوئی بھی علامت دیکھیں تو فوری طور پر قریبی صحت مرکز یا ڈسٹرکٹ کوویڈ کنٹرول روم سے رابطہ کریں۔