زخمیوں کی عیادت کے لئے مقامی ہسپتال پہونچنے والے، سا باش شاہ کی مآب لنچنگ

Mob Lynching in Dhuliya

زخمیوں کی عیادت کے لئے مقامی ہسپتال پہونچنے والے، سا باش شاہ کی مآب لنچنگ
جمعیۃ علماء مہاراشٹر کے صدرمولانا ندیم صدیقی کی ضلع کلکٹر ،ایس پی، وزیر رابطہ دیگر حکام سے بات چیت
  شر پسند عناصرکے خلاف سخت سے سخت کاروائی کا مطالبہ  
 

دھولیہ ۔ 1؍ اپریل ( پریس ریلیز ) آج یہاں ضلع دھولیہ کےایک علاقہ ڈونڈائچہ میںلڑکی کو چھیڑنے کے معاملے میں شر پسندوں کی جا نب سے ایک مسلم نوجوان جس کے ساتھ شر پسندوں نے مارپیٹ کیا تھا اور فائرنگ میں زخمی نوجوانوں کی عیادت کے لئے مقامی ہسپتا پہونچے ساباش شاہ پر شر پسندوں نے ہجوم کی شکل میں حملہ کردیا  اور مآب لنچنگ کرتے ہوئے لات گھونسوں اور ڈنڈوں سے اس قدر ماراکہ وہیں پر اس کی موت واقع ہو گئی ،جمعیۃ علماء مہا راشٹر کے صدر مولانا ندیم صدیقی نے اس واقعہ کی سخت مذمت کرتے ہوئے ضلع کلکٹر ،ایس پی، پالک منتری دیگر حکام سے بات چیت کی اور شر پسند عناصرکے خلاف سخت سے سخت کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ادھرجمعیۃ علماء دھولیہ کے ایک وفد نے بھی ضلع کلکٹر سے ملاقات کرکے ایک یاد داشت پیش کی اور شر پسندوںکو  قرار واقعی سزادینے کا مطالبہ کیا ہے۔

                واضح رہے کہ ضلع دھولیہ کے ڈونڈائچہ نامی بستی میں ایک مسلم نوجوان کو راجپوت برادری سے تعلق رکھنے والی غیر مسلم لڑکی کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرنے کے الزام میں شر پسندلڑکوں نے زبردست زود و کوب کرنے کے بعد پولیس کے حوالے کردیا ، صورت حال کی تحقیق کئے بغیر فرقہ پرست ذہنیت حامل پولیس انسپکٹر نیا نیشور وارے نے بھی اس ملزم کو باندھ کر بے تحاشا پٹائی کی ،یہ خبر جب ملزم کے اہل خانہ اور مسلم علاقوں تک پہونچی تو بڑی تعداد میں مسلم نوجوان  پولیس اسٹیشن پر جمع ہوئے اور حالات کو دیکھتے ہوئے پولیس اور فرقہ پرست غنڈوں پر کیس درج کی مانگ کرنے لگے۔ اسی دوران عوام کے بڑھتے ہوئے ہجوم کو دیکھ کر پی آئی وارے نے تین راؤنڈ فائرنگ کردی جس وجہ سے ایک نو جوان عبدالقادر لوہار کے ہاتھ میں گولی لگتے ہوئے گزر گئی اور شعیب بلال کھاٹک کے پیر میں گولی لگی جب کہ تینوں کو دواخانے لے جایا گیا تو بھاجپا الپ سنکھیاکے صدر پاباش شاہ وغیرہ ہاسپٹل پہنچے تو غیر مسلم لڑکوںپر مشتمل ایک بڑے ہجوم نے انکو گھیر لیا اور پتھر بازی شروع کردی جس کی زد میں آکر شاباش شاہ کی موقع پر ہی موت ہوگئی.مرحوم کے سرپر ڈنڈوں سے بھی مارا گیا پورا معاملہ پولیس پی آئی وارے کی لاپرواہی اور فرقہ پرستی کا نتیجہ ہےحالات ہنوز خراب ہیں، دونوں طرف سے حالات مزید خراب ہونے کا اندیشہ ہے۔

 ضلع جمعیۃ علماء کے ذمہ داروں کی اطلاع اور صورت حال سے واقف کرنے پر جمعیۃ علماء مہا راشٹر کے صدر مولانا حافظ محمد ندیم صدیقی صاحب نے ضلع کلکٹر ،ضلع ایس پی اور پالک منتری سے رابطہ کرکے حالات کو جلد از جلدقابو کرنے ،شر پسندوں کے خلاف کڑی کاروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے ،ایسے ہی مرحوم کے اہل خانہ کو معقول معاوضہ دینے اور زخمیوں کے مکمل علاج کرنے کا مطالبہ کیا ہے ،جمعیۃ علما شہر دھولیہ کے وفد نے سول ہسپتال پہونچ کر زخمیوں کی عیادت کی،اور ڈاکٹر وںکو بہتر علاج کرنے کی ہدایت دی ،ضلع کلکٹر سے ملاقات اور سول اسپتال کے دورہ کے موقع پر مفتی قاسم جیلانی صدر جمعیۃ علماء ضلع دھولیہ ،مفتی مسعود قاسمی شہر صدر جمعیۃ علماءدھولیہ ،عبد الاحد اسعدی ضلع جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء ضلع دھولیہ و دیگر اراکین جمعیۃ شامل تھے ۔مولانا ندیم صدیقی نے دونوں فریق کے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ افوہوں پر دھیان نہ دیں اور امن و امان کی فضاء قائم رکھیں